Ticker

6/recent/ticker-posts

ضیاء الرحمن لئیق احمد پر ‏قاتلانہ ‏حملے ‏کی ‏اصل ‏وجہ ‏جان ‏کر ‏چونک ‏جاؤنگے


 مالیگاؤں(نیوز 41) پولس کنٹرول روم سے موصول تفصیلات کے مطابق جئے ہند ٹیلر کے سامنے بوہرہ باغ کا ساکن 20 سالہ فریادی ضیاء الرحمن لئیق احمد نے قلعہ پولس اسٹیشن میں شکایت درج کرائی کہ ملزم شیخ ضمیر شیخ ہارون عرف ٹارزن اور اس کے تین ساتھیوں نے مل کر فریادی پر تلوار سے قاتلانہ حملہ کردیا جس کی وجہ سے فریادی شدید زخمی ہوگیا اور شفاء ہاسپٹل میں زیر اعلاج ہے۔
قاتلانہ حملے کی اصل وجہ فیس بک پر فریادی کی فوٹو وائرکردی تھی۔ اس معاملے میں پوچھ تاچھ پر ملزم جنید کالیہ ہنسنے لگا۔ جب فریادی نے پوچھا کہ کیوں ہنس رہے ہو تو چارو ملزمین نے ضیاء الرحمن کو زمین پر پٹخ دیا اور تیز دھار ہتھیار سے سر،کمر،سینہ اور گردن پر قاتلانہ حملہ کرکے فریادی کو شدید زخمی کردیا۔ یاد رہے کہ یہ معاملہ 20 جون 2021 کو رات میں 12:30 کے درمیان خانقاہ اشرفیہ کے پاس (گھڈے) میں پیش آیا۔
 اس معاملے میں قلعہ پولس اسٹیشن کے عملہ نے بوہرہ باغ رسول پورہ کا ساکن  ملزم شیخ ضمیر شیخ ہارون عرف ٹارزن، جنید کالیا،راجو ریتی والا اور ظہیر کو حراست میں لیتے ہوئے تمام ملزمین کے خلاف سنگین قلم 307/34/ 289/2021 کے تحت مقدمہ اور کیس داخل کردیا ہے۔

ایک تبصرہ شائع کریں

0 تبصرے